May 20, 2018

اسلام میں راکھی باندھنے کا حکم ؟

اسلام میں راکھی باندھنے کا حکم ؟

 

سوال: السلام علیکم مفتی صاحب

کیا اسلام میں غیر مسلموں کے ہاتھ سے راکھی باندھنے کی اجازت ہے ؟

(محمد تنویر علی)،

جواب: وعلیکم السلام و رحمۃاللہ،

ہاتھ میں راکھی باندھنا یہ غیر مسلموں کے تہوارکا ایک حصہ ہے،تو اس کو باندھنے کی اسلام میں اجازت نہیں ہے،کیوں کہ حدیث پاک میں آیا ہے کہ،رسول کرمﷺ نے فرمایا جو جس قوم سے مشابھت اختیار کرتا ہے تو وہ انہیں میں سے ہوجا تا ہے،

(مشکاۃ المصابیح،جْ1)،

ہاں،بعض ملک اور مقامات ایسے ہوتے ہیں کہ جہاں ہر مذھب کے لوگ رہتے ہوں تو وہا ں کوئی لڑکی کسی مسلمان کو اپنا بھائی تصور کرتی ہوتو اور وہ اس کو راکھی باندھنا چاہتی ہو اور ایسی صورت میں اس کے انکار سے معاملات بگڑنے اور دلوں میں برائی پیدا ہونے ک اندیشہ ہو تو ایسی صورت آخری حد تک اس سے بچنے کی کوشش کرے اور اگربچ نہ سکے تو اس کو ہاتھ میں لے کر اسکو بعد میں کہیں ڈالدیں تو کوئی حرج نہیں ہے۔